اعظم خان کا نام سٹاپ لسٹ سے خارج ، پی اے سی کے بلانے پر وہاں پیش ہوجائیں ، اسلام آباد ہائیکورٹ کی ہدایت .

اسلام آباد(یو این آئی نیوز):اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہرمن اللہ کی عدالت نے سابق وزیر اعظم عمران خان کے سابق پرنسپل سیکرٹری اعظم خان کا نام پی این آئی ایل سے نکالنے کا حکم دیتے ہوئے ہدایت کی ہے کہ پبلک اکاؤنٹس کمیٹی بلائے تو اعظم خان پیش ہو جائیں۔
گذشتہ روزسابق اعظم خان کا نام سٹاپ لسٹ میں شامل کرنے کے خلاف کیس کی سماعت کے دوران درخواست گزار کی جانب سے قاسم وادود ایڈووکیٹ عدالت پیش ہوئے، چیف جسٹس نے کہاکہ کس قانون کے تحت یہ نام سٹاپ لسٹ میں شامل کیا گیا؟،پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا ایک مخصوص کردار ہے،
وکیل نے کہاکہ اعظم خان کو کہا گیا کہ ریکارڈ کے ساتھ پیش ہوں،جب وہ اب پرنسپل سیکرٹری کے عہدے پر ہی نہیں تو کیسے ریکارڈ پیش کریں،چیف جسٹس نے کہاکہ اس کیس میں ریکارڈ تو نیب کے پاس ہو گا،وکیل نے کہاکہ طیبہ گل والے کیس میں بلایا گیا تھا کہ وہ پی ایم آفس آئیں اور وہاں پر رہیں یا نہیں، جب بھی انہیں بلائیں گے وہ ایکس پاکستان چھٹیوں کے بعد پیش ہو جائیں گے،
چیف جسٹس نے اسسٹنٹ اٹارنی جنرل سے استفسارکیاکہ آپ جسٹیفائی کریں کہ پی این آئی ایل یعنی سٹاپ لسٹ کیا چیز ہے؟، پی این آئی ایل کا کوئی لیگل سٹیٹس نہیں،ایسی کوئی وجہ نہیں کہ نام پی این آئی ایل میں شامل کیا جائے،
درخواست گزار کے وکیل نے کہاکہ اعظم خان کی8 ستمبر کو روانگی اور 25 ستمبر سے پہلے واپسی ہے،
پبلک اکاؤنٹس کمیٹی میں اس سے پہلے بھی پیش ہو سکتے ہیں،چیف جسٹس نے کہاکہ اگر پبلک اکاؤنٹس کمیٹی اعظم خان کو8 ستمبر سے پہلے بلاتی ہے تو وہ پیش ہو جائیں،اعظم خان کی آزادی پر کوئی قدغن نہیں لگائی جا سکتی، وکیل نے کہاکہ کیا ان کو بلانا صرف شرمندہ کرنا ہے یا واقعی کچھ پوچھنا ہے؟، چیف جسٹس نے کہاکہ اعظم خان کو اگر پارلیمنٹ میں طلب کیا گیا تھا تو انہیں جانا چاہیے تھا،طیبہ گل والے ایشو والے کیس میں اور کس کس کو سمن کیا گیا؟ کیا دیگر لوگ پیش ہو گئے؟،
اسسٹنٹ اٹارنی جنرل نے کہاکہ پبلک اکاؤنٹس کمیٹی نے مالم جبہ کیس میں نام ای سی ایل میں شامل کرنے کا کہا، چیف جسٹس نے کہاکہ اگر طیبہ گل کیس میں اعظم خان کو سمن کیا گیا تو بتائیں کہ اس ایشو پر دیگر تمام متعلقہ افراد کو بھی سمن کیا گیا یا نہیں؟،یہ بھی بتائیں کہ کیا دیگر افراد کے نام بھی پی این آئی ایل میں شامل کرنے کی ہدایات دی گئیں؟،
عدالت نےدرخواست منظور کرتے ہوئے سابق وزیر اعظم عمران خان کے سابق پرنسپل سیکرٹری اعظم خان کا نام پی این آئی ایل سے نکالنے کا حکم دیتے ہوئے ہدایت کی کہ پبلک اکاؤنٹس کمیٹی بلائے تو اعظم خان پیش ہو جائیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں