وزیراعظم محمد شہباز شریف کا نیشنل فلڈ ریسپانس کوآرڈی نیشن سینٹر (این ایف آر سی سی) کا دورہ .

اسلام آباد(یو این آئی نیوز):وزیراعظم محمد شہباز شریف نے پیرکو نیشنل فلڈ ریسپانس کوآرڈی نیشن سینٹر (این ایف آر سی سی) کا دورہ کیا۔ ڈپٹی چیئرمین این ایف آر سی سی اور نیشنل کوآرڈینیٹر این ایف آر سی سی نےمعزز مہمانوں کا استقبال کیا۔این ایف آر سی سی کے مطابق دورے کے دوران وفاقی وزراء اور دیگر اعلیٰ سول و ملٹری حکام بھی موجود تھے۔
وزیراعظم کو ملک کے مختلف سیلاب زدہ علاقوں میں سیلاب کی حالیہ صورتحال، آئندہ 4 ہفتوں کے لیے مستقبل میں بارش کی پیش گوئی اور متاثرہ آبادی کے چیلنجوں کو کم کرنے کے لیے عملی کام کے طریقہ کار، مواصلاتی انفراسٹرکچر کی بحالی، متاثرہ افراد کے لیے خوراک کی فراہمی، بے گھرمتاثرہ افراد کو پناہ گاہ اور طبی امداد کی فراہمی کے منصوبوں بارے میں تفصیل سے آگاہ کیا گیا۔
وزیر اعظم نے نقصانات کی تشخیص کے لئے مشترکہ سروے جلد یقینی بنانے کی ہدایت کی۔ وزیراعظم نے اس قومی آفت کے دوران سول انتظامیہ بالخصوص این ڈی ایم اے، پی ڈی ایم اے اور سول آرمڈ فورسز بشمول پاکستان رینجرز اور فرنٹیئر کور کے ساتھ مل کر مسلح افواج کی تمام ریسکیو اور ریلیف کی کوششوں کو سراہا۔
بنیادی ڈھانچے کی مرمت اور دیکھ بھال کے لیے این ایچ اے ، ایف ڈبلیو او اور پاکستان آرمی کے انجینئرز کی مسلسل اور تیز رفتاری سے کام کو سراہتے ہوئےوزیر اعظم نے کہا کہ اب ہماری توجہ متاثرہ علاقوں اور لوگوں کی بحالی پر ہے جو اس قدرتی آفت سے متاثرہ ہوئے ہیں۔
وزیر اعظم نے خصوصی طور پر سوات میں قراقرم ہائی وے، بحرین پل اور ڈی آئی خان میں سگو پل کو کھولنے کے لیے دن رات کام کرنے والے فوجی دستوں کی تعریف کی اورکہا کہ ہم ایک مربوط قومی کوشش کے ذریعے ہی اس قدرتی آفت پر قابو پا سکتے ہیں۔
وزیر اعظم نے زور دے کر کہا کہ ہمیں اس چیلنج کا جواب دینے کے لیے ایک قوم کے طور پر آگے بڑھنا ہوگا، اگرچہ چیلنج بہت بڑا ہے لیکن یہ متحرک اورمضبوط ہونے کا موقع بھی ہے۔ وزیر اعظم نے اس مشکل کے دوران پاکستان سے رابطے کرنے اور عالمی شراکت داروں کی حیثیت سے مشکلات کو بانٹنے کی کوششوں پر عالمی برادری، دوست ممالک اور تنظیموں کا شکریہ ادا کیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں